یوم عالمی مادری زبان

یوم عالمی مادری زبان

یوم مادری زبان کی مناسبت سے مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اورنگ آباد میں ایک تاریخ ساز پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت و نیابت ہر دل عزیز پروفیسر ڈاکٹر جناب عبد الرحیم صاحب پرنسپل مانو سی. ٹی. ای اورنگ آباد نے کی ۔

یو جی سی کی ہدایت پر ایسوسیٹ جناب ڈاکٹر پٹھان وسیم سر نے ڈیبیٹ کمپیٹیشن اور اس کے ساتھ ساتھ سنگگ کمپٹیشن کا اہتمام کیا۔

ڈیبیٹ کمپیٹیشن کا آغاز مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اورنگ آباد میں پہلی بار ہوا۔ اساتذہ اور طلباء اس سے کما حقہ محظوظ ہوئے

کمپیٹیشن کا عنوان (کیا مادری زبان اعلی تعلیم کو متاثر کرتی ہے) اس کی لکیر اس انداز سے کھینچی گئی تھی کہ کچھ طلبہ و طالبات اس کے ثبوت پر اصول و ضوابط اور دلائل کی روشنی میں اپنے خیالات احساسات کا اظہار کئے اور کچھ طلبہ و طالبات اس کی نفی پر اپنی دلائل سے ثبوت کے دلائل کا رد کئے اس کے علاوہ اخیر میں سب کو دو دو منٹ دیا گیا تاکہ اپنے خیالات کو مستحکم کر سکیں

ثبوت و نفی پر بولنے والوں نے کوٹھاری کمیشن، افضل کمیشن، ذاکر حسین کمیشن، تعلیمی ادارے کے تعلقات سے گاندھی جی کے خیالات، تعلیمی کمیشن 2005، جاپان، امریکہ، چین، پاکستان، بنگلہ دیش کے تعلیمی کمیشن اور مختلف یونیورسٹیوں کے پروفیسروں کے خیالات کو دلائل کی روشنی میں پیش کئے

ڈاکٹر محترمہ صدیقی عظمیٰ، ڈاکٹر محترمہ ھاجرہ نوشین، ڈاکٹر محترمہ شاہین پروین نے جج کا فریضہ انجام دئیے اور طلبہ و طالبات کے دلائل اور انداز بیاں کی روشنی میں پر نمبرات کو اپنی شیٹ پر رقم کرکے محفوظ رکھے

آخیر میں بزم کی آخری کڑی جناب ڈاکٹر بدرالسلام صاحب قبلہ کو اسٹیج پر مدعو کیا گیا اور ڈاکٹر صاحب نے ہندوستان کی مادری زبان کی اہمیت و افادیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کی مختلف زبانیں اس ملک کی خوبصورتی ہے یہ واحد ملک ہے جہاں پر 22/ سرکاری زبانیں ہیں جس پر ریاستوں کے دار و مدار ہے اس بات کی بھی وضاحت کی کہ ہندوستانی ریاستوں کی تقسیم زبان کی بنیاد پر کی گئی ہے اس کے علاوہ موصوف نے زبان کی یونیٹی کو بیان کرتے ہوئے کہا کہ یہاں کثرت میں وحدت ہے ہندوستان کے علاوہ کسی اور ملک میں اتنی زبانیں اور اتنے مذاہب کے ماننے والے بھی نہیں ہیں اس چیز کو موصوف نے وطن کا خاصہ بتایا

زبان کی تعلیم پر بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جو جتنا علوم و فنون کا ماہر ہوگا اس کا ذہنی سطح بھی اتنے ہی اعلیٰ پیمانے کا ہوگا اور عالمی سطح پر اس کی پہچان مستحکم ہوگی

پروگرام کے آخری دور میں جناب ڈاکٹر پٹھان وسیم سر ایسوسیٹ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اورنگ آباد نے نتائج کا اعلان کیا. ڈیبیٹ کمپیٹیشن میں ذیشان الہی تیمی اور راقم السطور محمد تفضل عالم مصباحی نے اول مقام پر رہے جبکہ دوسرے مقام پر شہاب الدین اور خادم الاسلام رہے

سنگگ کمپیٹیشن میں صلاح الدین اول مقام پر جبکہ غلام غوث دوسرے مقام پر رہے

اس پروگرام میں ٹیچرس اور اسٹاف خصوصی طور پر ڈاکٹر پروفیسر عبد الرحیم، ڈاکٹر جناب پٹھان محمد وسیم، ڈاکٹر جناب بدرالسلام، ڈاکٹر محترمہ صدیقی عظمیٰ، ڈاکٹر محترمہ ھاجرہ نوشین، ڈاکٹر محترمہ شاہین پروین اس کے طلبہ طالبات خصوصی طور پر عدنان،شفیع اللہ، جمیل، رفیع اللہ، ساگر، ذیشان الہی، اختر نظام، دانش، علی، فردوس اشرفی، ملک، اکبر، شاکر، ابصار، مستحسن، عمران، عاشق، معید انجم، نمرہ، سافیہ، آیشہ، رقیہ، سیماب، نوشین، ترنم آس وغیرہ وافر مقدار میں موجود تھے

از محمد تفضل عالم مصباحی متعلم مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی اورنگ آباد مہاراشٹر

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *