خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی دریا دلی : دنیا کے 1000منتخب مسلمانوں کو عمرہ ادا کرنے کی دعوت

خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی دریا دلی : دنیا کے 1000منتخب مسلمانوں کو عمرہ ادا کرنے کی دعوت
ڈاکٹر ارشد فہیم مدنی
سعودی حکومت ہر سال دنیا کے مختلف ملکوں سے نمائندہ افراد کو حج اور عمرہ کی ادائیگی کیلئے ’’شاہی مہمان ‘‘ کے طور پر اپنے ملک آنے کی دعوت دیتی ہے ، اور ان کے جملہ اخراجات ادا کرتی ہے ۔ اس دیرینہ اور پاکیزہ روایت کو برقرار رکھتے ہوئے نئے سال 2024 کیلئے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان نے بن عبدالعزیزآل سعود حفظ اللہ نے گذشتہ 3جنوری 2024کو ایک شاہی فرمان کے ذریعے ایک ہزار مسلمانوں کو عمرہ ادا کرنے کی منظوری دے دی ہے ۔ اس شاہی فرمان کے جاری ہونے کے بعد اسلامی امور کے وزیر ڈاکٹر عبداللطیف بن عبدالعزیز آل الشیخ حفظہ اللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ میں اس مبارک قدم پر خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بند عبدالعزیز اور ان کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کو مبارکباد دیتا ہوں اور ان کا شکریہ ادا کرتا ہوں ، یہ مبارک فیصلہ یہ بتاتا ہے کہ حکومت سعودی عرب اور اس کے حکمراں دنیا میں اسلام اور مسلمانوں کے امور سےبے انتہا دلچسپی رکھتے ہیں۔ ان کے باہمی تعلقات کو مضبوط اور طاقتورر دیکھنا چاہتے ہیں، اور پوری دنیا میں اسلامی کاز سے جڑے ہوئے لوگوں کو ایک ساتھ جمع کرکے باہمی ملاقات اور استفادہ کا موقع فراہم کرتے ہیں۔
ان شاہی مہمانوں کی ضیافت اور عمرہ کی ادائیگی میں ان کی رہنمائی کا فریضہ وزارت اسلامی امور انجام دیتی ہے، اور ان کا انتخاب بھی یہی وزارت کرتی ہے، اس لئے وزیر موصوف نے اپنے بیان میں یہ وضاحت بھی کی ہے کہ جن ایک ہزار مسلمانوں کو عمرہ کی دعوت دی گئی ہے وہ دنیا کے مختلف ممالک کی نمائندہ اسلامی شخصیات کے علاوہ ائمہ و مشائخ جامعات و مدارس کے اہم اساتذہ اور عالم اسلام کی بااثر شخصیات ہوںگی۔ اسلامی امور کے وزیر ڈاکٹر عبداللطیف آل الشیخ نے اپنے بیان کے اخیر اپنی وزارت کو ملنے والے ہر طرح کے تعاون کا ذکر کرتے ہوئے یہ بتایاکہ وزارت اسلامی امور پوری کامیابی کے ساتھ اسلام کے پیغام کو پوری دنیا میں عام کرنے اور اخلاقی قدروں کو پھیلانے میں سرگرم ہے، بغض و کراہیت اور غلو و شدت پسندی کو روکنے میں بڑا اہم کردار ادا کررہی ہے۔
بلاشبہ سعودی عرب دنیا کا وہ واحد ملک ہے جو عام مسلمانوں کے کاز سے دلچسپی رکھتا ہے، اور اس کے حکمراںدنیا میں امن و امان اور بقائے باہم کےلئے ہمیشہ کوشاں رہتے ہیں، خاص طور پر اس حکومت نے حرمین شریفین کی تعمیر وتوسیع وتزئین کے میدان میں جو کارہائے نمایاں انجام دیا ہے، اس کی مثال نہیں ملتی۔ ذیل میں چند نمایاں خدمات پیش خدمت ہیں۔
۱۔ زائرین اور حاجیوں کےلئے مکمل امن وراحت کے ماحول میں عبادات کی ادائیگی کا انتظام۔
۲۔حج اور عمرہ کی ادائیگی کےلئے ٹرین، بس اور مواصلات کے تمام ترقی یافتہ ذرائع کا انتظام۔
۳۔ حجاج اور زائرین کو دوران قیام پیش آنے والی تمام انسانی ضروریات کو پورا کرنے کا بہترین انتظام۔
۴۔حرمین شریفین کے تمام توسیعی پروگراموں کی تکمیل جس میں خانۂ کعبہ کا مطاف، خارجی صحن اور تمام پل اورپلیا کی تکمیل قابل ذکر ہے۔
۵۔ خانۂ کعبہ کے قریب ذرائع مواصلات کا عمدہ نظم و نسق تاکہ حجاج و زائرین بآسانی آمدو رفت کرسکیں۔
۶۔حرمین شریفین کے قریب اعلیٰ درجہ کے وسائل علاج سے لیس ہاسپیٹل کا قیام، تاکہ حجاج و زائرین کو پیش کرنے والے ہر طرح کی پریشانیوں کا صحیح اور بروقت علاج ہوسکے۔
اس کے علاوہ خانۂ کعبہ کی زیارت کرنے والے حجاج و زائرین کی بڑھتی ہوئی تعدادکو دیکھتے ہوئے حکومت سعودی عرب اپنےویژن 2030 کے پیش نظر آنے والے دنوں میں تیس ملین زائرین کے استقبال کی تیاری میں مصروف ہے، اللہ تعالیٰ حکومت سعوی عرب کی حفاظت فرمائے اور اسے مزید خدمت دین کی توفیق عنایت فرمائے۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *