طاقتیں تمہاری ہیں اور خدا ہمارا ہے۔

طاقتیں تمہاری ہیں اور خدا ہمارا ہے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
از:سرفراز عالم ابوطلحہ ندوی بابوآن ارریہ بہار۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ شعر منظر بھوپالی صاحب کا انہوں نے تقریباً آج سے دس سال پہلے لکھا ہے،انہوں نے اس شعر میں کیا کمال کی بات کہی ہے جس کی عکاسی آج پوری طرح ۲۲ جنوری پر فٹ ہورہی،وطن عزیز کے جو حالات فی الحال ہمارے دیش واسیوں کے سامنے ہیں وہ کسی بھی فرد و بشر سے مخفی نہیں ہے، آج کفر و الحاد کی طاقتیں ایک طرف اور مسلمانوں کی بے بسی ایک طرف ہے ، اس کے لئےہمیں صبر و استقامت سے کام لینا چاہئے ، بابری مسجد کی شہادت ہم مسلمانوں کو ہمیشہ ہمیش رلاتے رہیں گے، مسلمانوں کے بین ثبوت و دلائل ہونے کے باوجود انتہا پسند طاقتیں ہماری تاریخی و پرانی بابری مسجد ہم سے چھین کر مزید مکاتب، و مدارس کو مسمار کرنا چاہتی ہے لیکن انہیں پتا ہی نہیں کہ غار ثور میں صرف اللہ کے رسول ﷺ اور ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ ہی موجود تھے ، اس باوجود اللہ تعالی نے رسول ﷺ کی زبان پر ایسی بات نکالی جو ہمارے لئے نسخہ کیماء کی حیثیت سے کم نہیں ہے،”لا تحزن إنا الله معنا ” یہی وہ جملہ تھا جس کی بدولت اللہ تعالی نے نبی کریم ﷺ کو ظفریاب بنایا ، ہمیں بھی صبر و شکیب کا دامن تھامنے رکھنا چاہئے ہے اور ہر ممکن کوشش و کاوش یہ ہوکہ ہم اپنے نوجوان نسل کو الحادی کفریہ عقائد سے دور رکھیں، کچھ نام نہاد مسلم اپنے دین و عقیدہ کی پروا کئے بنا ان کی ہر ہر کام میں جے جے کار کر رہے ہیں جو کہ نہایت ہی افسوس ناک بات ہیں، پھر ہم ایک بارے اپنی پرانی روایات و رواج کو دھراۓ اور تاریخ اسلام کا مضبوطی سے مطالعہ کریں ، ان شاء اللہ تمام طاقتیں اپنی ناکامی و ناہنجاری اور زوال کا رونا روئے گی، وہ دن دور نہیں ہے کہ جب ہم بھی کہیں گے۔ طاقتیں تمہاری ہیں اور خدا ہمارا،
عکس پر نہ اتراؤ آئینہ ہمارا ۔
عمر بھر تو کوئی بھی جنگ لڑ نہیں سکتا۔
تم بھی ٹوٹ جاؤ گے تجربہ ہمارا۔
محترم قارئین کرام!

قارون، فرعون، ہامان اور ابوجہل جیسا ملعون طاقتور جس کو اپنی طاقت پر ناز و گھمنڈ تھا ، وہ بھی چکنا چور ہو گیا، اسے بھی زوال ہونا پڑا۔
لہذا تمام امت مسلمہ سے اپیل ہے کہ اپنی ناکامی کا رونا نہ روئے یہ سب اللہ تعالی کی مصلحت کا ثمرہ ہے جو ثمر دار درخت کی طرح اپنا پھل دیتا رہے گا، بشرطیکہ اپنا ایمان اپنی ضمیر کا سودا نہ کرے، نمازوں کی پابندی کرے، مساجد کو اباد رکھے، اپنی امت کی فکر کرے ان شاءاللہ ہم کامیاب ہونگے تمام طاقتیں نیست ونابود ہو کر رہ جائے گی اس کا نام و نشاں تک باقی نہیں رہے گا۔
باقی رہا نام اللہ کا۔۔۔۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *