تحقیق کی زبان دھوپ کی طرح روشن ہونی چاہیے- شہاب ظفر اعظمی

پٹنہ ۔ 7 فروری ۔
تحقیق کسی چیز کو اس کی اصل شکل میں دیکھنے کا نام ہے -حقائق کی بازیافت میں رائے تاویل اور قیاس کی کوئی جگہ نہیں ہے- تحقیق کے لیے استدلال ٬مسلسل عمل٬ غیر جانبداری ٬محنت شاقہ٬حافظہ اور زبان پر گرفت ضروری عناصر ہیں ۔ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر شہاب ظفر عظمی نے شعبہ اردو کی ایک تقریب میں کیا۔ انہوں نے اردو تحقیق اصول اور مبادیات کے عنوان سےتحقیق کے اصولوں پر مثالوں کے ساتھ مدلل گفتگو کی۔ انہوں نے طلبہ کو تحقیق کے دوران جذباتیت روایت پرستی گنجلک زبان اور تن آسانی سے بچنے کی تلقین کی۔
واضح ہو کہ آج شعبہ اردو پٹنہ یونیورسٹی کے زیر اہتمام پی ایچ ڈی کورس ورک کے تحت شعبے میں ایک افتتاحی اجلاس کا انعقاد کیا گیا۔ موضوع تھا “اردو تحقیق اصول اور مبادیات ”۔ اس موضوع پر اپنی قیمتی و تجرباتی باتیں پیش کرنے کے لیے دو خاص مہمانان پروفیسر جاوید حیات اور ڈاکٹر قاسم خورشید کی موجودگی شعبے کے طلبہ و طالبات کے لیے پرمسرت اور حوصلہ افزا تھی ۔
شعبہ اردو پٹنہ یونیورسٹی میں پی ایچ ڈی کورس کے اس افتتاحی اجلاس کی صدارت ڈاکٹر سورج دیو سنگھ نے کی جبکہ کلیدی خطبہ ڈاکٹر شہاب ظفر اعظمی نے پیش کیا ۔دو خاص مہمانوں میں پروفیسر جاوید حیات اور ڈاکٹر قاسم خورشید نے تحقیق کے امور اور اصول پر تکنیکی گفتگو پیش کرتے ہوئے طلبہ کو اس کے اہم نکات کی طرف متوجہ کیا۔ ڈاکٹر قاسم خورشید نے تحقیق کی سمت و رفتار پر واضح طور سے باتیں کیں جن میں ہر مواد کو اہم قرار دیتے ہوئے اس کی اصل تک رسائی کرنا ضروری بتایا۔ اس کے لیے انہوں نے بسمل عظیم آبادی اور رام پرشاد بسمل سے منسوب ایک غزل کی مثال دیتے ہوئے بہت اچھی تقریر پیش کی ۔پروفیسر جاوید حیات نے تحقیق کی مبادیات کے حوالے سے دستی نمونوں کی قدرو قیمت کو ضروری جاننے کی تلقین کی اور تحقیق کے طریقہ کار میں ترتیب کو ناگزیر بتایا ۔انہوں نے غالب کے کئی اشعار کو حوالے کے طور پر پیش کیا۔ صدارتی خطبے میں پروفیسر سورج دیو سنگھ نے اس پروگرام کی غرض و غایت بیان کی اور طلبہ کو پابندی وقت٬دل جمعی اور ڈسپلن کی خوبیاں بتاتے ہوئے تحقیق کی سنجیدگی کی جانب متوجہ کیا ۔شعبے کے استاد ڈاکٹر محمد ضمیر رضا نے بحسن وخوبی اس پروگرام کی نظامت کی جبکہ شکریہ کے فرائض ڈاکٹر عشرت صبوحی نے ادا کیے۔ تقریب کا آغاز ڈاکٹر عارف حسین کی نعت خوانی سے ہوا تھا ۔تقریب میں شعبے کے طلبہ و طالبات کے علاوہ دیگر کالج کے طلبہ اور ریسرچ اسکالرز بھی کثیر تعداد میں شریک ہوئے۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *