کیسے نکلیں گھر سے باہر سامنے کرونا ہے

کیسے نکلیں گھر سے باہر سامنے کورونا ہے

امانت اللہ محمد سہیل تیمی

مترجم…دعوہ وارشاد سینٹر مطعن سعودی عرب

 

 

کورونا وائرس کی چپیٹ میں تقریبا ساری دنیا ہے اتنی خطرناک آفت نظر کو بھی دھوکہ دینے والا وائرس تاریخ میں شاید ہی سنی گئ ہو متعدی وباؤں میں یہ ایک الگ نوعیت کی انسانوں کے ذریعہ پہیلنے والی وبا ہے۔

جس سے ہر کس وناکس خوف زدہ اور سہما ہوا ہے دنیا کے اکثر ممالک میں کرفیو نافذ ہے آپسی تعلقات، معاملات اور گھر سے باہر قدم نکالنے پر کہیں کم تو کہیں مکمل پابندی ہے طبی احتیاطی تدابیر، صلاح و مشورہ کو ضرور اختیار کرنے کو کہا جارہا ہے لوگ اپنے ہی گھروں میں قید وبند کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں اس کی خطرناکی اور تباہ کن اثرات کو محسوس کرتے ہوئے حکومت نے عام لوگوں کی سلامتی کے مد نظر عبادت گاہوں کے علاوہ دیگر بھیڑ بھاڑ اور ازدحام والے مقامات بھی بند کرادئے ایسے میں رمضان کی عبادتیں ،عید کی چہل پہل اور خوشیاں خوف کے سائے تلے بے رنگ و بے رونق ہوگئے ہر سو سناٹا پسرا ر رہا حد تو یہ کہ نماز بھی مساجد و عیدگاہ میں پڑھنے سے لوگ محروم ہو گئے۔ حیران و پریشان اور خوف و خدشات کے سائے تلے جینے پر بے بس ہیں ۔

محترم قارئین …ایسے پردرد خوف و ہراس اور خدشات وخطرات کے حالات میں احتیاطی تدابیر کو اپناتے ہوئے ہمیں چند باتوں پر توجہ دینے کی اشد ضرورت ہے ۔

١- صفائ ستھرائی کو اپنے لیے لازم کرلیں ہو سکے تو سینیٹائزر اور ماسک کا استعمال کریں۔

٢- اس وبا کا مقابلہ ہنسی مزاق سےنہ کریں۔

٣- توبہ اور استغفار کثرت سے کریں۔

٤- پوشیدہ طور پر ضرور صدقہ و خیرات کریں۔

٥-دعا واذکار کی پابندی کریں اس میں بندہ مسلم کی حفاظت ہے۔

٦-اس وبا سے بچنے کے لئے طبی صلاح و مشورہ کو ضرور اختیار کریں۔

 

اس کے علاوہ گھر سے باہر نکلتے وقت ہمیں بابرکت اذکار اور مفید دعائیں جو نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہیں اپنی زندگی کا لازمی حصہ بنانا چاہیے کیونکہ دعا مومن کا ہتھیار ہے ان دعاؤں کو پڑھنے سے بندہ مومن ابتلاء و آزمائش اور وباوں اور بیماریوں سے بحکم الہی محفوظ رہے گا اور شرور و آفات سے بچاو اور خدشات و خطرات سے دل و دماغ کے لئے کفایت ہوگی جیساکہ حدیث کے الفاظ میں قلب مومن کو تقویت دی گئی ہے حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے مروی ہے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ” إذا دخل الرجل من بيته فقال ‘بسم الله توكلت على الله لا حول ولا قوة الا بالله ‘ ”

ترجمہ۔۔۔” جب آدمی اپنے گھر سے نکلے تو یہ دعا پڑھے ‘ اللہ سبحانہ وتعالی کے نام سے نکلتا ہوں اللہ پر ہی توکل اور بھروسہ کرتاہوں اور اللہ کے سوا کوئ ہمت اور قوت نہیں ہے ” مزید فرمایا کہ آدمی یہ دعا پڑھتا ہے تو اسے کہا جاتا ہے تجھے ہدایت مل گئ ،کفایت ہوگئ اور تیرا بچاو ہوگیا اس پر شیطان اس سے ایک طرف ہوجاتا ہے تو دوسرا شیطان کہتا ہے تو ایسے آدمی کو کیا کرسکتا ہے جسے ہدایت مل گئ اس کے لئے کفایت ہوئ اور بچاو ہوگیا

صحيح الجوامع(٤٩٩١ )

سنن أبي داود (٥٠٩٥) الترمذي (٣٤٢)۔

مذکور ذکر مسلمان کے لئے اتنا مفید اور کارگر ہے کہ جب بھی اپنے گھر یا رہنے کی جگہ اپنے دینی یا دنیوی معاملات کی غرض سے باہر نکلے تو اس کو پڑھ لے تاکہ بندہ مومن اپنے رب کی حفاظت میں رہے

ہم میں سے کسی کو جب باہر کی ضرورت پڑ جائے تو یہ دعا پڑھ لینا چاہیئے جو ام سلمہ رضی اللہ عنہا سے مروی ہے کہ ” ما خرج النبي صلى الله عليه وسلم من بيتي قط إلا رفع طرفه الي السماء فقال ” الهم إني أعوذ بك أن أضل أو أضل أو أزل أو أزل أو أظلم أو أظلم أو أجهل أو يجهل علي ” ترجمہ ۔۔۔ ام سلمہ رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم جب بہی میرے گھر سے نکلتے تو اپنی نگاہ کو آسمان کی اٹھاتے اور فرماتے ” یا اللہ میں تیری پناہ مانگتا ہوں اس سے کہ گمراہ ہو جاوں یا گمراہ کیا جاوں پھسل جاوں یا پھسلایا جاوں ظلم کروں یا یا مجھ پر ظلم ہو جہالت کا کام کروں یا مجھ پر جہالت کا کام ہو صحيح ابن ماجه (٣١٣٤ ) أبي داؤد (٥٠٩٤)

ابن ماجه (٣٨٨٤)

 

درج بالا حدیث میں آسمان کی طرف نگاہ اٹھانے کی حکمت رب کی نگہبانی کا احساس کرنا ہے اور یہ اس بات پر دلالت کرتی ہے کہ کائنات کی باگ ڈور اللہ کے ہاتھ میں ہے وہ جو چاہتا ہے ہوتا ہے اور جو نہیں چاہتا نہیں ہوتا،

اس لئے مومن کا عقیدہ مضبوط ومستحکم ہونا چاہیئے کہ دشمن ہزار ہوں پر اللہ ہی محافظ و نگراں ہے اس حدیث پر عمل کرنے سے ماب لنچنگ جیسی آفت اور بلاء و وباء سے باذن اللہ حفاظت ہوگی اور دشمن مرعوب ہونگے

یہی وجہ کہ بعض سلف صالحین اپنی دعا میں جبکہ وہ گھر سے نکلتے تو کہتے تھے “الهم سلمني وسلم مني ” یا اللہ مجھے دوسروں سے سلامتی میں رکھ اور مجھ سے بھی دوسروں کو سلامت رکھ ۔

کورونا وائرس سے بچنے کے لئے جب آپ اپنے گھر سے نکلیں یا صبح وشام کے وقت حضرت انس بن مالک کی روایت کردہ حدیث ضرور پڑھنے کی عادت بنالیں “الہم إنی أعوذ بك من البرص والجنون والجذام ومن سيئ الأقسام ” اے اللہ میں تیری پناہ میں آتا ہوں برص سے کوڑھ سے پاگل پن سے اور ہر قسم کی بری بیماری سے۔

صحیح الجامع عن انس بن مالک (١٢٨١)

اسی طرح ابوداود اور ترمذی نے حضرت عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ سے روایت کیا کہ جو شخص بھی روزانہ صبح و شام کے وقت يہ دعا تین دفعہ پڑھ لے تو اسے کوئ چیز نقصان نہیں پہنچائے گی “بسم الله الذي لا يضر مع اسمه شيء في الأرض ولا في السماء وهو السميع العليم ”

ترجمہ۔۔۔ اس اللہ کے نام سے جس کے نام کی برکت سے زمین یا آسمان کی کوئ چیز بھی نقصان نہیں پہونچاسکتی اور وہ سننے والا اور علم رکھنے والا ہے

دلچسپ واقعہ یہ کہ اس حدیث کے راوی ابان بن عفان رحمة الله عليه کو انکے جسم کے اک طرف فالج ہوگیا تو اک شخص انکو تعجب سے دیکھنے لگا کہ یہی اس حدیث کے راوی ہیں اور انہی ہر فالج کا حملہ ہوا ہے : ابان رحمہ اللہ علیہ کہنے لگے کیا دیکھتے ہو ؟ حدیث تو برحق ہے لیکن جس دن مجھ پر حملہ ہوا تھا اس دن میں اس دعا کو پڑھنا بھول گیا ۔صحيح الجامع (٦٤٢٦) أبي داؤد( ٥٠٨٨) الترمذي (٣٣٨٨) الفتوحات الربانية لابن علان (١٠٠/٣)

کرونا وائرس سے بچاو کے لئے یہ دعا بھی مفید ہے “أعوذ بكلمات الله التامات من شر ما خلق” میں اللہ سبحانہ وتعالی کے کامل کلمات کے ذریعے ساری مخلوق کے شر پناہ چاہتا ہوں ۔صحیح مسلم (٢٧٠٩)

کورونا وائرس سے بچنے کے لئے یہ دعا بھی نفع بخش ہے “الهم إني أسألك العفو والعافية في الدنيا والآخرة الهم إني أسألك العفو والعافية في ديني ودنياي وأهلي ومالي، الهم استر عوراتي وآمن روعاتي، الهم احفظني من بين يدي ومن خلفي ،وعن يميني وعن شمالي ومن فوقي وأعوذ بعظمتك أن أغتال من تحتي ” ترجمہ۔۔۔ یا اللہ میں تجھ سے اپنے دین ،دنیا ،اہل ،اور مال میں عفو ار عافیت کا سوال کرتا ہوں یا اللہ میرے گناہوں پر پردہ رکھ اور مجھے اپنے غم اور خوف میں امن سے رکھ یااللہ امجھے اپنے سامنے سے ،پیچھے دائیں ،بائیں اور اوپر سے حفاظت میں رکھ اور میں تیری عظمت کے واسطے سے تیری پناہ چاہتا ہوں کہ میں اپنے نیچے سے کسی مصیبت میں مبتلا کیا جاوں ۔صحیح ابن ماجه (٣١٢١) أبي داؤد (٥٠٧٤) ابن ماجه (٣٨٧١)

اے اللہ کورونا عالمی وبا ہے جس سے ہر مسلمان کی حفاظت فرما اور ہم سب کو حسن خاتمہ نصیب فرما ۔(آمین یارب)

آپ کا دینی بھائ

امانت اللہ محمد سہیل تیمی

مترجم…دعوہ وارشاد سینٹر مطعن سعودی عرب

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *