کامیابی کے پیچھے ایک عورت کا کردار

 

 

کامیابی کے پیچھے ایک عورت کا کردار۔

 

از قلم: عرفان ابو طلحہ التیمی

 

یہ طے شدہ حقیقت ہے کہ کامیابی وکامرانی انسانی زندگی میں ایک بڑا سرمایہ اور بڑی دولت بھی سمجھی جاتی ہے، اور ایسا کیوں نہ ہو، بلکہ ہم میں کا ہر انسان زندگی میں کامیاب ہونے کے لیے ہر طرح کے صعوبتیں ، پریشانیاں، کٹھینائیاں، مشقتیں، آفات و بلیات کا سامنا کر کے زندگی کی تابناکیاں اور روشن مستقبل کے خاطر مرمٹنے کے لیے تیار وکوشاں ہوتا ہے، بسااوقات انسان کی انتھک جدوجہد اور کد و کاوشیں رائیگاں ہو جاتی ہیں، قسمت کا مارا یاس ناامیدی کا شکار ہو جاتے ہیں، پھر محنت وجفاکشی سے دور اور ایک غریب کی طرح زندگی گزارنے پر مجبور ہو جاتے ہیں۔

 

دوستو! ایسا اس لئے ہوتا ہے کہ اس شخص کا کوئی رہنما اور گائڈ کرنے والا نہ ہونے کے کارن یا یہ کہ وہ صحیح طریقے سے تیاری نہیں کی ہوگی وغیرہ وغیرہ، اسی طرح کامیابی وکامرانی ہر انسان کی دلی خواہش ہوتی ہیں کہ ہمارا لڑکا ہماری لڑکی، بھائی، بہن وغیرہ دیگر تمام لوگ اپنی اپنی زندگی میں کامیاب ہونا چاہتے ہیں۔

جن کے لیے چند اہم نکات ذیل میں رقم کیا جا رہا ہے ۔

 

1۔ پہلی چیز یہ ہے کہ انسان اپنی خلقت پر غور وفکر کرتے ہوئے رب العالمین کی عبادت وبندگی کرے۔

 

2۔ دوسری چیز یہ کہ کامیابی وکامرانی کے لیے والدین کی دعائیں اور آشیرواد دوسرے لفظوں میں یوں کہئے کہ ماں کی ممتا اور باپ کا پیار ہی کامیابی وکامرانی کے لیے کافی وشافی ہوتا ہے۔

 

3۔یہ کہ پچپن سے لیکر لڑکپن تک جہدِ مسلسل بلا کسی ناغہ کے۔

 

4۔ اچھے رہمنا کا انتخاب جو منزل مقصود تک پہنچائیں۔

 

5 ۔ اچھے مصنفین کی کتابوں اور مطالعہ کا شوق وذوق پیدا کرنا۔

 

6۔ یہ کہ مقصد کا تعین، اور بلا مقصد سے دور۔

 

7۔ اپنے قیمتی اوقات کا صحیح استعمال صحیح کاموں میں ہوں، نیز، ضیاع وقت سے مکمل گریزاں ہونا۔

 

8۔ جید اساتذہ اکرام کا انتخاب عمل میں لانا۔

 

9۔ سب سے اہم پہلو اس بارے میں یہ ہے کہ انسانی زندگی میں کامیاب ہونے میں ایک عورت کا کلیدی کردار ہوا کرتا ہے۔

 

10۔ اجنبی عورت کو اپنا کر یعنی شادی کر کے۔

 

ذیل میں چند نموذج بیان کرنے کی سعی کی جا رہی ہے۔

پہلا نموذج یہ ہے کہ ہمارے پیارے آقا محمد مصطفی ﷺ کی کامیابی وکامرانی کے پیچھے آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی تمام ازواج مطہرات رضی اللہ عنہن کی خصوصی تعاون اور مشاورت رہی ہیں بطور خاص سیدہ خدیجہ رضی اللہ عنہا وارضہا کی مشاورتی اور مالی تعاون رہی۔

 

دوسرا یہ کہ محدث زماں فقیہ دوراں امام سفیان ثوری رحمہ اللہ کی کامیابی وکامرانی کے پیچھے ان کی ماں کا بہت بڑا کردار رہا ہے۔

 

تیسرا مثال یہ ہے کہ امام المحدثین امیر المومنین فی الحدیث محمد اسماعیل البخاری رحمہ اللہ کی کامیابی وکامرانی کے پیچھے ان کی ماں اور بھائی کا اہم رول رہا ہے۔

 

قارئین کرام! یہ رہا اسلاف کرام کی کامیابی وکامرانی کے پیچھے ایک عورت کا خاصہ کردار، ان کے علاوہ اور ڈھیر ساری مثالیں تاریخ کےسنہرے صفحات میں موجود ہیں، جنہیں قلم وقرطاس کرنا امر محال ہے۔

 

 

 

 

خلاصئہ کلام یہ ہے کہ کسی کی کامیابی وکامرانی کی ذمہ داری اللہ رب العالمین کی ہاتھوں ہوا کرتی ہے محض عورت کامیابی وکامرانی میں ایک اہم ذریعہ ہوتا ہے، اس لئے ہر کوئی یہ کوشش کرے کہ اپنے رشتئے ازدواج میں ایک اچھی اور اخلاق مند لڑکی کا انتخاب کرے تاکہ ہمارا بھی مستقبل ہمارے ہی اسلاف کی طرح روشن اور تابناک ہو۔

 

اللہ تعالی تو ہمیں کلی توفیق ارزانی عطا فرمائے آمین۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *