فقہ اور قوت دلیل

فقہ اور قوتِ دلیل

 

ابوعدنان محمد طیب محمد خطاب بھواروی

جمعية الدعوة والإرشاد وتوعية الجاليات في المجمعة ـ السعودية

 

کچھ خوارج اپنی تلواروں کو سونتے ہوئے امام ابوحنیفہ نعمان بن ثابت رحمہ اللہ کے پاس آئے، امام صاحب اس وقت اپنی مسجد میں بیٹھے ہوئے تھے۔

خوارج نے آتے ہی کہا اے ابوحنیفہ آپ سے ہمارے دو سوال ہیں اگر آپ نے ان کا جواب دیدیا تو آپ بچ جائیں گے ورنہ ہم آپ کو قتل کردیں گے ۔

امام ابوحنیفہ رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا: تم اپنی تلواریں میان میں کرلوورنہ میرا دل اسی پر لگا رہے گا۔

خوارج نے کہا : ہم کیسے اس کو میان میں کرلیں جب کہ ہم اس کو بے میان رکھ کر آپ کی گردن مارنے میں اجروثواب کی امید رکھتے ہیں ۔

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ نے فرمایا : پھر مسئلہ پوچھو۔

خوارج نے کہا: دروازہ پر دو جنازے ہوں، جن میں سے ایک جنازہ شرابی کا ہو جونشہ کی حالت میں مرگیا ہو ، دوسرا جنازہ ایک ایسی عورت کا ہوجو حُبلی من الزنا ہو یعنی زنا کی وجہ سے حاملہ ہوئی ہو اور وہ توبہ کرنے سے پہلے ہی بچہ جننے کے دوران مرگئی ہو۔

سوال آپ سے یہ ہے کہ کیا یہ دونوں مومن ہیں یا کافر؟

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : یہ دونوں کس فرقہ سے ہیں؟ کیا یہ یہودی ہیں ؟

خوارج : نہیں۔

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : کیا یہ نصرانی ( کرسچن ) ہیں ؟

خوارج : نہیں۔

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : کیا مجوسی (آتش پرست) ہیں ؟

خوارج : نہیں۔

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : پھر یہ دونوں کس میں سےہیں ؟

خوارج : مسلمانوں میں سے ہیں ۔

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : تم نے اپنے ان دونوں سوالوں کا جواب خود ہی دیدیا۔

خوارج : یہ جنتی ہیں یاجہنمی؟

امام ابوحنیفہ رحمہ اللہ : میں ان دونوں کے بارے میں وہی کہوں گا جو ابراہیم خلیل اللہ نے ان لوگوں کے بارے میں فرمایا تھا جو اِن دونوں سے زیادہ بُرے تھے : (فَمَنْ تَبِعَنِيْ فَاِنَّهٗ مِنِّىْ ۚ وَمَنْ عَصَانِيْ فَاِنَّكَ غَفُوْرٌ رَّحِيْمٌ ) ’’پس جو شخص میری اتباع کرے گا وہ بیشک مجھ میں سے ہوگا اور جو میری نافرمانی کرے گا تو بیشک تو بڑا مغفرت کرنے والا بے حد رحم کرنے والا ہے‘‘ ( سورہ ابراہیم آیت : ۳۶)

اِن دونوں کے بارے میں وہی کہوں گا جس طرح عیسی علیہ الصلاۃ والسلام نے فرمایا تھا : (اِنْ تُعَذِّبْهُمْ فَاِنَّهُمْ عِبَادُكَ ۚ وَاِنْ تَغْفِرْ لَهُمْ فَاِنَّكَ اَنْتَ الْعَزِيْزُ الْحَكِيْمُ ) ( اے اللہ) ’’ اگر تو انہیں سزا دے تو وہ تیرے بندے ہی ہیں اور اگر تو انہیں معاف فرما دےتو بلاشبہ تو غالب اور دانا ہے” (سورہ مائدہ آیت : ۱۱۸)

یہ سن کر خوارج الٹے پاؤں واپس لوٹ گئے۔ عربی سے اردو:

ماخوذ من ( کتاب ’’ المختار من الفوائد والاداب ‘‘ للمولف سمیر بن عدنان الماضی )

 

ابوعدنان محمد طیب محمد خطاب بھواروی

جمعية الدعوة والإرشاد وتوعية الجاليات في المجمعة ـ السعودية

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *