ایامِ سعید کی نوید۔۔۔۔۔۔

ایام سعید کی نوید ۔۔۔۔۔۔

از قلم ۔ محمد محب اللہ المحمدی ، سپول ،بہار

 

ابھی چند دنوں کے بعد ہم پر أفضل الایام سایہ فگن ہوگی ، جسکی قسم اللہ نے کھائی ہے ، یعنی عشرۂ ذی الحجہ ( ماہ ذی الحجہ کے شروع کے دس دن ) ۔ ان کی کتاب وسنت میں بڑی فضیلت وارد ھے انکی فضیلت کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے کہ اللہ نے سورۂ فجر میں اسکی قسم کھائی ہے ، فرمایا .. والفجر وليال عشر ، ۔۔قسم ہے فجر کی اور قسم ہے دس راتوں کی ۔ اہل علم کو معلوم ھے کہ اللہ کا کسی چیز کی قسم کھانا اسکی اہمیت وفضیلت پر دلالت کرتی ہے حضرت ضحاک بن مزاحم فرماتے ہیں عشر الأضحي أقسم بهن لفضلهن على سائر الأيام ( الدر المنثور ٨/٥٠١)۔ جمہور مفسرین کے نزدیک ۱۰ راتوں سے مراد عشرہ ذی الحجہ کے شروع کے دس دن ھیں علامہ شوکانی فرماتے ہیں : وليال عشر هي عشر ذي الحجة في قول جمهور المفسرين ( فتح القدير ٥/٤٣٢) امام احمد ،امام نسائی ،بزار ، ابن جریر ، ابن منذر ، حاکم ،ابن مردویہ ،اور بیہقی نے شعب الایمان میں حضرت جابر رضی اللہ عنہ سے روایت کی اور حاکم نے صحیح بھی کہاہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا : ان العشر عشر الأضحي .. وفي رواية هي ليالي ذي الحجة.. صحیح البخاری میں (٢/٤٥٧) حضرت ابن عباس سے روایت ہے کہ ۔۔۔ويذكروااسم الله في ايام معلومات …سے مراد عشرۂ ذی الحجہ کے ایام ھیں ۔۔۔۔ یہ ایام انتہائی سعید ومبارک ہوتے ھیں ان ایام میں اعمال صالحہ اللہ کو بے حد محبوب ہوتاہے ۔ یہی وجہ کہ بعض علماء نے اس عشرے کو رمضان کے آخری عشرہ پر ترجیح دی ہے کیونکہ اس عشرے میں نماز ،روزہ ،صدقہ وخیرات اور حج جیسے بڑے بڑے اعمال پاۓ جاتے ہیں ۔ جو دوسرے ایام میں نہیں ہیں ۔۔ حافظ ابن حجر رحمہ اللہ فرماتے ہیں ۔۔۔ والذي يظهر أن السبب في امتياز عشر ذي الحجة لمكان اجتماع امهات العبادات فيه وهي الصلوات والصيام والصدقة والحج ولا يتأتي ذالك في غيره ( فتح الباري ٢/٤٦٠)

اور ہمارۓ بعض اسلاف کے بارے میں آتا ہے کہ وہ فرماتے تھے ۔۔إذا دخلت العشر فلا تطفؤا سروجكم …یعنی جب عشرہ ذی الحجہ شروع ہو جاۓ تو اپنے چراغ ومصباح کو نا بجھاؤ بلکہ عبادات میں اجتہاد کرو،شب دیجوری میں رب سے قربت حاصل کرنے کی کوشش کرتے رہو ۔۔۔

لہذا مسلمانوں لاک ڈاؤن کا یہ موسم بہت سنہرا موقع ھے کہ ہم اپنے رب سے لو لگائیں ، رات میں تہجد کا اھتمام کریں ، ایسے مواقع ہمیشہ میسر نھیں ہوا کرتے ۔۔۔اس عشرے سے ہم زیادہ سے زیادہ مستفید ہوں ۔۔ حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ..مامن أيام أعظم عند الله سبحانه ولا أحب إلى الله العمل فيهن من هذه الأيام العشر ،فأكثروا فيهن من التهليل والتكبير والتحميد ..رواه أحمد والطبرانى …

میں ملت اسلامیہ کے تمام علماء اور طلباء إخوان سے گذارش کررہاہوں کہ ازراہ کرم عوام کو عشرة ذي الحجة میں زیادہ سے زیادہ عبادات کرنے کی ترغیب دلائیے ۔۔۔۔۔ اور خود بھی عمل کریئے اور یہ تحریک چلائیے کہ ہم سبھی امسال خوب سے خوب اس مبارک عشرے سے مستفید ہوں گے صدقہ وخیرات نماز روزے اور دعوت وتبلیغ، حلقۂ تفسیر وحدیث واستفسار مسائل شرعیہ ، یہی ہمارا شیڈول ھے اس عشرے کا اللہ ہمیں ان مبارک ایام میں اجتہاد فی العبادات کی توفیق دے۔۔۔۔ دراصل یہی آواز اور یہی پیغام ہے اس عشرے کا۔ ۔۔۔۔ اور یہی نوید ہے اس عشرےکا ۔۔۔۔۔۔۔

طبتم وطابت أوقاتكم …

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *