مانو سی. ٹی. ای اورنگ آباد میں یومِ اساتذہ کا انعقاد.

 

مانو سی. ٹی. ای اورنگ آباد میں یومِ اساتذہ کا انعقاد.

 

 

نتیجہ فکر :- محمد تفضل عالم مصباحی پورنوی

مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی 9889916329

 

 

 

یوں تو انسانی زندگی میں ہر وقت کی اہمیت ہے مگر کچھ ایام ایسے ہیں جسے معاشرے کے افراد جشن کے طور پر مناتے ہیں۔ انہیں میں سے ایک دن یوم اساتذہ ہے۔

روئے زمین پر کوئی ایسی جگہ نہیں ہے جہاں پر اساتذہ کی اہمیت، افضلیت کو اجاگر نہ کی جاتی ہوں۔ ہندوستان کی سرزمین پر 1962ء سے پہلے نائب اور دوسرے صدر جمہوریہ ہند کی تاریخ پیدائش 5 ستمبر 1988ء کو یوم اساتذہ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ اسی مناسبت سے 5 ستمبر 2020ء کو مانو سی. ٹی. ائ. اورنگ آباد مہاراشٹر میں آن لائن یوم اساتذہ کے پروگرام کا انعقاد کیا گیا ۔ اس پروگرام کی صدارت محترمہ ڈاکٹر شاہین الطاف شیخ پرنسپل مانو سی. ٹی. ائ نے کیں۔

 

اسلاف کے راستے پر عمل کرتے ہوئے پروگرام کی ابتدا محمد عدنان نے تلاوت قرآن مقدس سے کی۔ صلاح الدین، نوشین ہاشمی اور عاشق رضا نے نعت، غزل گنگناے۔ محمد علی، غلام غوث، رقیہ خاتون سافیہ پرین نے یوم اساتذہ کی اہمیت وافادیت اور عظمت اساتذہ پر روشنی ڈالیں۔ جبکہ پروگرام کی نظامت کا فریضہ محمد تفضل عالم نے انجام دی ۔

 

ناظم بزم نے اظہار خیال کے لئے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر محترمہ شاہین پروین کو اس شعر کے ساتھ مدعو کیا۔

 

رہبر بھی یہ ہمدرد بھی یہ غم خوار ہمارے

استاذ یہ قوموں کے ہیں معمار ہمارے۔

 

محترمہ ڈاکٹر شاہین پروین جملہ اساتذہ، طلبہ و طالبات کو مبارکبادی پیش کرتی ہوئیں اپنی رائے کا اظہار کیا۔ محترمہ نے استاد اور شاگرد کے رشتوں پر روشنی ڈالی۔ اور اسی مناسب سے ایک درویش کے قصے کے ما حصل سے بچوں کو سمجھایا۔ محترمہ کے بعد ناظم بزم نے اسسٹنٹ پروفیسر محترمہ سیدہ ہاجرہ نوشین کو اظہار رائے کے لئے دعوت سخن دی۔ محترمہ موصوفہ آتے ہی طلبہ کو اپنی ذمہ داریوں کا احساس دلایا اور پھر بیان حال دل پر مشغول ہو گئی۔ محترمہ بچوں کی باتوں سے اپنی بات کی ابتدا کیں۔ اور معلم کی پیشہ ورانہ شخصیت پر طلبہ کو گراں قدر معلومات فراہم کیں۔ اخیر میں بزم کی آخری کڑی صدر محفل ایسوسی ایٹ پروفیسر پرنسپل محترمہ ڈاکٹر شاہین الطاف شیخ کو ان اشعار کے ساتھ مدعو کیا۔

 

ماں باپ اور استاد سب ہیں خدا کی رحمت

ہے روک ٹوک ان کی حق میں تمھارے نعمت ۔

 

جن کے کردار سے آتی ہو صداقت کی مہک

ان کی تدریس سے پتھر بھی پگھل جاتے ہیں۔

 

پرنسپل محترمہ شاہین الطاف شیخ اساتذہ و تلامذہ کا شکریہ ادا کرتی ہوئی یوم اساتذہ کی مبارک باد پیش کیں۔ محترمہ نے طلبہ و طالبات کو مستقبل میں ابھرنے والے مسائل کی طرف نشاندہی کرتے ہوئے تیار رہنے کی نصیحت کیں۔ اور طلبہ و طالبات کو طریقہ تدریس کے باریک گوشوں سے روشناس کراتے ہوئے فرمائیں کہ آج طلبہ و طالبات کو پڑھانے کا مقصد نہیں ہونا چاہیئے بلکہ سیکھانے کا مقصد ہونا چاہئے۔ اور پھر طلبہ کا شکر ادا کرتے ہوئے رخصت ہو گئی ۔ اخیر کار پرنسپل میم کی اجازت سے پروگرام کے اختتام کا اعلان کیا گیا۔

 

اس پروگرام میں ٹیچنگ اسٹاف خصوصی طور پر پرنسپل ڈاکٹر محترمہ شاہین الطاف شیخ ، ڈاکٹر جناب بدرالسلام، محترمہ سیدہ ھاجرہ نوشین، ڈاکٹر محترمہ شاہین پروین اس کے علاوہ طلبہ طالبات میں خصوصی طور پر راقم السطور محمد تفضل عالم، محمد عدنان، فردوس اشرفی، شاکر ہاشمی، شاداب رضا، شفیع اللہ، جمیل، رفیع اللہ، ساگر، اختر نظام، دانش، علی، فردوس، ملک رضاء الباری، اکبر، رضی اللہ عاشق، انور، سافیہ، عائشہ، رقیہ، نوشین اور دیگر طلبہ و طالبات کثیر تعداد میں موجود تھے۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *