کچھ لوگوں کے اندر ٹھنڈی برداشت کرنے کی قوت زیادہ کیوں ہوتی ہے؟


کچھ لوگ دوسروں کے مقابلے میں زیادہ سردی کیوں برداشت کر سکتے ہیں؟
ورزش کرنے کے بعد برفیلے پانی میں ڈبکی لگانے سے حاصل ہونے والی تازگی کا احساس ممکن ہے چند پیشہ ور ایتھلیٹس کی ترجیح میں شامل ہو جس سے وہ اپنی تھکاوٹ اتار سکتے ہیں۔ مگر سردیوں میں کوئی اپنے آپ کو تندرست رکھنے کے لیے اگر ایسا کرتا ہے تو پھر سردی اتنی ہی سخت ثابت ہو سکتی ہے جتنا کہ ایسا کرنے سے لطف حاصل ہوتا ہے۔

تفریحی مقاصد کے لیے تیراکی کرنے والے ماٹلدا ہیے کے لیے گرم یا سرد پانی میں نہانا کوئی انتخاب نہیں ہے۔ ٹھنڈے پانی میں نہانا ان کی صحت کے لیے مفید ہے مگر ایسا ہر کسی کے لیے نہیں ہے۔

ان کے مطابق ‘جب میں نے کھل کر تیراکی کرنے کی کوشش کی تو میں زیادہ دیر تک پانی میں نہیں ٹھہر سکا، میں چند منٹ تک ہی پانی میں ٹھہر سکا اور پھر باہر نکل آیا۔ کچھ وجوہات ہیں جن کی بنیاد پر میری بہن زیادہ دیر تک پانی میں رہ سکتی ہیں۔ میرے خیال میں سردی برداشت کرنے سے متعلق ہم میں فرق ضرور ہے۔‘

میڈیا میں ٹھنڈے پانی میں نہانے کے کچھ ذہنی صحت کے فوائد تو ضرور بتائے گئے ہیں مگر یہ زیادہ واضح نہیں ہیں۔ یہ فوائد زیادہ تر ایک 24 برس کی خاتون کے تجربات پر مشتمل ہیں۔ تاہم یہ معلوم نہیں ہے کہ یہ کیس سٹڈی اتنی مقبول کیونکر ہے۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *