اگر آپ بھی ہیں گرم پانی پینے کے عادی تو جان لیں اس کے پانچ بڑے نقصانات

اگر آپ بھی بار بار گرم پانی پینے کے عادی ہیں تو جان لیں اس کے پانچ بڑے نقصانات

کچھ لوگ کارونا وائرس کو روکنے کے لئے روزانہ گرم پانی پیتے ہیں. موسم گرما میں گرم پانی پینا زیادہ دیر تک آپ کی پیاس نہیں بجھا سکتا لیکن یہ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ آپ کے حلق کو صاف رکھنے کے لئے مؤثر ہے. صبح ایک گلاس گنگنا پانی آپ کے صحت کے لئے اچھا ہے لیکن بار بار گرم پانی پینے کے بہت سے نقصانات بھی ہیں.

گردے پر اثر پڑتا ہے
ہمارے گردوں میں ایک خاص کیپلی نظام موجود ہے، جو فاضل پانی اور ٹاکسنس کو جسم کے باہر نکالنے میں مدد کرتا ہے. ریسرچ وضاحت کرتا ہے کہ گرم پانی آپ کے گردوں پر بہت زیادہ زور دیتا ہے، اس وجہ سے گردے کو اپنا کام کرنے میں دشواری آتی ہے .

نیند کے مسائل
رات کو سوتے وقت گرم پانی پینے سے، آپ کو نیند کا مسئلہ ہوسکتا ہے. رات کو گرم پانی پینے کی وجہ سے آپ کو پیشاب بھی زیادہ لگتا ہے اور آپ کے خون کے خلیات پر دباؤ بڑھتی ہے. سوتے وقت گرم پانی کا استعمال نہ کریں.

جسم کے اندرونی اعضاء کو نقصان
گرم پانی کے درجہ حرارت جسم کے اندرونی اعضاء کو متاثر کرتی ہے. مسلسل پانی پینے سے جسم کے اندرونی اندرونی اعضاء پر زبردست خطرہ کا ڈر بنا رہتا ہے. جسم کے اندرونی اعضاء انتہائی نازک اور حساس ہوتے ہی. اس صورت میں، اگر آپ بہت جلدی جلدی گرم پانی پیتے ہیں، تو یہ آپ کے اندرونی اعضاء میں چھالے پڑ سکتے ہیں.

خون کی حجم پر اثر
زیادہ گرم پانی پینا خون کے حجم کے لئے بھی خطرناک ہوسکتا ہے. ضروری مقدار سے زیادہ گرم پانی استعمال کرتے ہوئے خون کی کل مقدار میں اضافہ ہوتا ہے. خون کی گردش ایک بند نظام ہے اور اگر یہ غیر ضروری دباؤ حاصل کرتا ہے، تو وہاں ہائی بلڈ پریشر اور بہت سی دیگر کارڈیو کے مسائل ہوسکتے ہیں.

اعصاب میں سوجن
بہت سے لوگ ایسے ہیں جو پیاس کے بغیر گرم پانی پینے سے ان کے دماغ کے نسوں میں سوزش آسکتی ہے. لہذا جب پیاس محسوس ہو تبھی ہوں گرم پانی پانی کا استعمال کریں . بار بار گرم پانی پینے سے سر درد کا بھی مسئلہ بڑھتا ہے.

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *