صدقہ فطر : غلہ یا قیمت؟؟

*صدقہ فطر : غلہ یا قیمت ؟*

فہیم جسیم الدین تیمی مدنی

صدقہ فطر کو رمضان کے اختتام پر روزے داروں کے نفس کو لغو اور فحش باتوں کے گناہ سے پاک کرنے اور مسکینوں کو کھانا کھلانے کی غرض سے فرض کیا گیا،صدقہ فطر ایک توقیفی عبادت ہے جس کی بنیاد خالص صحیح اور صریح نصوص پر ہے، اس میں رائے و قیاس کی کوئی گنجائش نہیں ہے، اس سے متعلق نصوص شرعیہ کو کھنگالنے سے پتہ چلتا ہے کہ صدقہ فطر کھانے کی چیزوں میں سے ادا کیا جائے گا،حضرت ابو سعید خدری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں : ہم نبی کریم صلی اللہ علیہ و سلم کے عہد میں عید الفطر کے دن ایک صاع غلہ نکالتے تھے، ابوسعید خدری رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ ہمارا کھانا جو،کشمش، پنیر، اور کھجور ہوا کرتا تھا، اس حدیث سے معلوم ہوا کہ صدقہ فطر “طعام” یعنی کھانے کی چیزوں سے نکالنا ہے، وقت اور جگہ کے اعتبار سے یہ کھانے کی چیزیں مختلف ہو سکتی ہیں،انہی میں سے فطرانہ نکالنا ہے، جہاں تک صدقہ فطر کو قیمت کی شکل میں نکالنے کا مسئلہ ہے تو یہ واضح نصوص کی بنیاد پر جائز نہیں ہے، امام مالک، امام شافعی، امام احمد بن حنبل، محدث عصر علامہ ناصر الدین البانی، امام ربانی شیخ ابن باز، فقیہ عصر شیخ ابن عثيمين رحمہم اللہ اور شیخ صالح بن فوزان حفظہ اللہ اور دیگر علماء کے نزدیک صدقہ فطر کے طور پر قیمت دینا جائز نہیں ہے، اگر کسی نے قیمت دے دی تو اس کا صدقہ ادا نہ ہوگا،
*ادائیگی کا وقت* : صدقہ فطر کا وقت دراصل عید کا چاند نکلنے سے لیکر نماز عید سے پہلے تک ہے،البتہ صحابہ کے عمل سے عید سے ایک یا دو دن صدقہ فطر نکالنے کی رخصت ہے، اس سے پہلے نکالنا خلاف سنت ہے،
*صاع کی مقدار* : صدقہ فطر کی ادائیگی میں حجازی صاع کا اعتبار کیا گیا ہے جو اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ و سلم کے زمانہ میں رائج تھا، کیلو گرام کے حساب سے اس کے وزن میں اختلاف ہے، تمام طرح کے شک و شبہ سے بچتے ہوئے ایک صاع کے حساب سے تین کیلو صدقہ فطر ادا کرنا بہتر ہے، جیسا کہ سعودی عرب کی دائمی کمیٹی برائے فتوی کا موقف ہے، شیخ ابن باز رحمہ اللہ بھی اسی کے قائل ہیں،

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *