کیا ہم میں ایسا یقین موجود ہے ؟

کیا ہم میں ایسا یقین موجود ہے؟
(محمد ذبیح اللہ عبد الرﺅف تیمی )
میں مسجد میں نماز کے بعد بیٹھا ہوا تھا۔میں نے اپنے قریب میں ایک چھوٹے بچے کو بارگاہ خداوندی میں ہاتھ اٹھاکر دعا کرتے ہوئے دیکھا ۔میں نے سنا وہ کہ رہا تھا ”اے میرے رب !میں نے اور محمود نے مصالحت کر لیا ہے پھر ہم ایک ساتھ ہوں گے اور ایک دوسرے کے ساتھ کھیلیں گے “۔
میں نے پوچھا :کیا اللہ نے تمہاری دعاقبول کرلی ؟
اس نے کہا:جب جب میں اپنے کسی دوست کے ساتھ جھگڑا کرتاہوں تو اللہ تعالی سے دعا کرتاہوں پھر ہم لوگ دوست ہوجاتے ہیں۔
پھر اس نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا :”میرے والد نے مجھے بتایا ہے کہ دعاہر چیز کرتی ہے “۔
اس کی سادگی نے مجھے مجبورکردیاکہ میں بھی پروردگار کے سامنے دست دراز کروںاور دعائیں مانگوں۔بچہ خاموش رہا ،یہاں تک کہ میں دعاسے فارغ ہو گیا ۔پھر اس نے مجھ سے کہا :کیا آپ کابھی کسی ساتھ معاملہ ہے ؟میں نے مسکرایا اور کہا:ہاں! بہت سے لوگوں کے ساتھ ۔
اس نے کہا :خوف کھائیں مت !اللہ تعالی نے ہر چیز کے لئے وقت مقرر کیا ہے ۔ممکن ہے کہ اسی وقت ہم تمام لوگوں کی دعائیں قبول کرلے ۔”میرے والد نے ایسا ہی بتایا ہے“ ۔
میں نے اس لمحہ محسوس کیاکہ وہ ہمیں بہت ہی خوبصورت اورسچی سادگی سے نصیحت کر رہا ہے ۔میں نے اس وقت سے دعا کو لازم پکڑ لیا ۔اللہ تعالی برکت عطافرمائے اس شخص کی زندگی میںجس نے ایسا پودا لگایا ہے ۔(اسامہ ابوبکر کے وال سے عربی سے اردو قالب)

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *