آج کے دن آلو

آج کے دن آلو

تیوہار کی وجہ سے گاؤں کی دکانیں بند تھیں بچے، بوڑھے، نوجوان عید قرباں کی خوشی میں مست تھے نئے نئے ملبوسات اور اچھے اچھے پکوان گاؤں کی فضاء کو معطر کئے ہوئ تھی شہر سے پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع چھوٹا سا گاؤں “رحیم پور” اس بار کھچا کھچ بھرا ہوا تھا ایسا لگ رہا تھا کہ گاؤں کے باہر رہنے والے تمام لوگوں نے میٹنگ کی ہو کہ اس بار بقرعید گاؤں پر ہی کرنی ہے ہر طرف خوشی ہی خوشی تھی کلو چچا کا بیٹا سادھارن لباس میں جونہی روڈ پر نکلا لوگوں کی حیرت کا ٹھکانہ نہ رہا اکرم سیٹھ نے تو پوچھ ہی لیا ارے کلوا کا بیٹوا کہاں جارہے ہو تمہیں پتہ نہیں آج عید کا دن ہے بچہ :پتہ تو ہے پر عید ہم غریبوں کے لئے نہیں آپ جیسے سیٹھوں کے لئے ہے صبح سے کچھ کھایا نہیں امی پیاز مسالہ تیار کرکے صبح ہی سے رکھی ہوئی ہیں کہ کہیں سے گوشت آئے گا تو پکا کر دوں گی اب جب کہ شام ہونے کو ہے امی نے کہا ہے کہ جاؤ د کان کھلواکر آلو ہی لے آؤ بچہ کی گفتگو ابھی جاری ہی تھی کہ اکرم صاحب کے یہاں سے لوگ کھانا کھاکر نکل رہے تھے ارے اکرم صاحب کیا بریانی پکی تھی بہت شکریہ کہ کر لوگ ایک ایک کرکے اجازت مانگ رہے تھے اور اکرم صاحب کا سر شرم سے جھکا تھا کہ آج کے دن بھی کوئ آلو کے لئے دکان کی تلاش میں ہے چاہ کر بھی اکرم صاحب اپنے آنسو روک نہ پائےخطاء معاف رہے نام اللہ کاشاہنواز صادق عبداللہجامعہ امام ابن تیمیہ

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *