دنیا کے آخری کونے تک مسلک اعلی حضرت کے فروغ میں اھم کردار ادا کیا تھا سرکار مفتی اعظم ھند نے: علامہ مختار بہیڑوی۔

 

پریس ریلیز 3.10.21
ناصر قریشی
صحافتی ترجمان

نیپال۔یوروپ امریکہ اور افریقی ممالک کے خاندان اعلیحضرت میں سب سے پہلے طوفانی دورے کرکے تعلیمات اعلیحضرت کو پہنچانے کا کام کیا تھا ریحان ملت نے۔مفتی محمد سلیم بریلوی ۔

مورخہ 3 اکتوبر 24 صفر المظفر بروز اتوار کو اسلامیہ گراؤنڈ بریلی میں خانقاہ رضویہ کے سربراہ حضرت علامہ سبحان رضا خاں سبحانی میاں صاحب اور سجادہ نشین حضرت مفتی احسن میاں کی صدارت اور سید آصف میاں اور مفتی سلیم بریلوی کی نگرانی میں عرس قادری رضوی کی تقریبات کا انعقاد نہایت تزک و احتشام کے ساتھ ھوا جس کے تحت سب سے پہلے صبح میں حضرت مفسر اعظم ھند اور حضرت ریحان ملت علامہ ریحان رضا خاں علیہ الرحمہ کے قل شریف کی تقریبات ھوئیں۔بعد نماز فجر قرآن خوانی۔۔حلقہ ذکر ھوا۔پھر میلاد پاک ھوا۔عاصم نوری نے میلاد پاک پڑھا۔قاری یوسف رضا نے نظامت اور مولوی صالح امام آزھری مسجد نے تلاوت کی۔
منظر اسلام کے پرنسپل مولانا عاقل۔مفتی افروز عالم۔مفتی معین الدین خان۔مولانا عبدالرحمان خان۔مولانا اعجاز انجم ۔مولانا سید شاکر سید کفیل ۔مولانا اختر ۔مفتی جمیل ۔سید انوار السادات وغیرہ نے حضرت جیلانی میاں اور حضرت ریحان ملت کی زندگی پر روشنی ڈالی۔9:58 پر ریحان ملت کا قل شریف اور 10:35 پر جیلانی میاں کا قل شریف ھوا۔
رات کو بعد نماز عشاء اسلامیہ گراؤنڈ میں سرکار مفتی اعظم ھند کا قل شریف 1:40 بجے ھوا۔اس سے پہلے قاری علیم رضا برکاتی کی نے تلاوت سے پروگرام کا آغاز کیا۔نعمان رضا نے نعت پڑھی۔ملک و بیرون ملک کے شعراء اور خطباء نے خطابات کئے۔مفتی اعظم کو اپنے وقت کا قطب کامل۔متقی اعظم اور مفتی اعظم بتایا۔قصبہ بہیڑی کے قاضی شرع شیر قادریت علامہ مختار احمد قادری نے اپنے بے مثال اور خصوصی خطاب میں کہا کہ اعلیحضرت کی تعلیمات کو دنیا کے گوشے گوشے تک پہنچانے میں سرکار مفتی اعظم ھند نے کلیدی کردار ادا کیا تھا۔آج ملک و بیرون ملک مسلک اعلیحضرت کی جو بہاریں دکھائی دے رہی ہیں وہ مفتی اعظم۔مفتی اعظم کے خلفا اور ان کے شاگردوں کی دین ھے۔
اس موقع پر تمھیدی گفتگو کرتے ہوئے مفتی محمد سلیم بریلوی صاحب نے فرمایا کہ ھندوستان کے علاوہ نیپال۔بنگلہ دیش پاکستان۔سرینام۔ھالینڈ برطانیہ۔غرض کہ امریکہ سے یوروپ اور یوروپ سے افریقہ تک دنیا کے بیشتر خطوں میں ریحان ملت حضرت علامہ ریحان رضا خاں علیہ الرحمہ نے جاجاکر مسلک اعلیحضرت اور سلسلہ قادریہ برکاتیہ رضویہ کو خوب فروغ بخشا ۔ان تمام خطوں میں ریحان ملت کی کاوشوں کے روشن نقوش آج بھی موجود ہیں۔ان کے جانشین اور مرکز اھلسنت خانقاہ رضویہ درگاہ اعلیحضرت کے سربراہ اور بزرگ شخصیت حضرت علامہ سبحانی میاں صاحب نے بھی مرکز اھلسنت کو خوب فروغ اور استحکام بخشا۔حضرت سبحانی میاں نے ھمیشہ جماعت اھلسنت کی شیرازہ بندی پر زور دیا ھے اور اس کے لئے وہ اب بھی برابر کوششیں کررھے ہیں۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *