جنگ آزادی میں علمائے کرام نے سب سے زیادہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا: پروفیسر غلام یحییٰ انجم

*جنگ آزادی میں علمائے کرام نے سب سے زیادہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا : پروفیسر غلام یحییٰ انجم*

27/ فروری ( محمد اشرف یاسین) جنگ آزادی میں علمائے کرام نے سب سے زیادہ بڑھ چڑھ کر حصہ لیا تھا اور اپنے جان ومال، آل و اولاد کی قربانیاں پیش کیں، مولانا ابوالکلام آزاد، مولانا ظفر علی خان، مولانا محمد علی جوہر، مولانا حسرت موہانی جیسے لاتعداد علمائے کرام نے جنگ آزادی میں قید و بند کی صعوبتیں برداشت کیں۔ ان کلمات کا اظہار جناب پروفیسر غلام یحییٰ انجم نے آج ملی ماڈل اسکول میں منعقد ایک قومی سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے اپنی افتتاحی تقریر میں کیا۔

پروگرام کا آغاز حافظ محمد اشرف نے تلاوتِ قرآن کریم سے کیا ہے، اس کے بعد “تحریک آزادی سے وابستہ علماء کی اردو خدمات” پر محمد اشرف یاسین نے اپنا مقالہ پڑھا۔ روزنامہ انقلاب، نئی دہلی ایڈیشن کے سب ایڈیٹر اور جواہر لال نہرو یونیورسٹی سے تعلیم یافتہ ڈاکٹر مظہر حسین نے “تحریک آزادی اور اردو میں غیر افسانوی ادب” پر اپنا پیپر پیش کیا۔ ڈاکٹر نعمان قیصر نے “تحریک آزادی اور اردو ناول” پر مقالہ پڑھا اور جامعہ ملیہ اسلامیہ، شعبۂ اردو کے استاد ڈاکٹر خالد مبشر نے “تحریک آزادی میں اُردو شاعری کا کردار” موضوع پر بہترین ریسرچ پیپر پیش کیا۔ دہلی کے معروف صحافی جناب غوث سیوانی نے “تحریک آزادی میں تعلیمی تحریکوں کا رول” پر مقالہ قلمبند کیا تھا جبکہ “تحریک آزادی اور اردو صحافت” پر دہلی کے مشہور اور سینئر صحافی، وائس آف امریکہ جناب سہیل انجم نے پیپر پڑھا۔

پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے رحمانیہ نیشنل فاؤنڈیشن کے روحِ رواں محمد رفیق خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب کو اُردو فروغ اور اردو کی تعلیم و ترویج اس کی نشر و اشاعت کے لیے کام کرتے رہنا چاہیے۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ شعبۂ اردو کے سابق صدر پروفیسر خالد محمود نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ آج ہم اپنی نئی نسل کو اپنے اسلاف کی قربانیوں سے آگاہ کریں، ہم لوگ نہ صرف اردو بلکہ مختلف علوم و فنون کی کتابوں کو خود بھی پڑھیں اور دوسروں کو پڑھنے کی تلقین بھی کریں، آج دانستہ طور پر ہماری تاریخ کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کیا جارہا ہے، چنانچہ ہمارے لیے تعلیم اس لیے بھی تاکہ ہم پوری جرأت اور ایمانداری کے ساتھ صحیح کو صحیح اور غلط کو غلط کہہ سکیں۔

واضح رہے کہ نظامت کے فرائض جناب غوث سیوانی صاحب نے انجام دیئے اور ڈاکٹر نعمان قیصر صاحب نے تمام سامعین و منتظمین کا شکریہ ادا کیا۔ پروفیسر غلام یحییٰ انجم اور پروفیسر خالد محمود نے تمام مقالہ نگاروں کو سرٹیفکیٹ دیا۔ پروگرام میں جامعہ نگر کے سیکڑوں لوگوں نے شرکت کی اور پروگرام کے بعد ظہرانہ تناول کیا۔

اپنے مضامین اور خبر بھیجیں


 udannewsdesk@gmail.com
 7462884092

ہمیں فیس بک پیج پر بھی فالو کریں


  https://www.facebook.com/udannewsurdu/

loading...
udannewsdesk@gmail.comآپ بھی اپنے مضامین ہمیں اس میل آئی ڈی پر بھیج سکتے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *